0
Friday 27 Jun 2014 06:31

گرفتار شیعہ رہنما خواجہ محمد علی کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا جا رہا ہے، عدالت میں پیش کیا جائے، اہلیہ کا مطالبہ

گرفتار شیعہ رہنما خواجہ محمد علی کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا جا رہا ہے، عدالت میں پیش کیا جائے، اہلیہ کا مطالبہ
اسلام ٹائمز۔ کئی ہفتوں سے گرفتار اسیر امامیہ خواجہ محمد علی کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ خواجہ محمد علی کو چند ہفتے قبل راولپنڈی سے گرفتار کیا گیا تھا، ان کی اہلیہ کے مطابق پولیس نے انہیں بلاوجہ حراست میں لے رکھا ہے اور اب بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا جا رہا ہے، خواجہ محمد علی کی اہلیہ کا کہنا تھا کہ ہمارا مطالبہ ہے کہ انہیں عدالت میں پیش کیا جائے۔ یاد رہے کہ مجلس وحدت مسلمین پاکستان کا شعبہ قانون خواجہ محمد علی کا کیس ڈیل کر رہا ہے۔ خواجہ محمد علی 2007ء میں اعظم طارق قتل کیس میں اے ٹی سی سے باعزت بری ہوا تھا۔
خبر کا کوڈ : 395433
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے