0
Sunday 22 Sep 2013 17:02

اے پی سی کے بعد دہشتگردی کو مزید تقویت ملی، میاں افتخار حسین

اے پی سی کے بعد دہشتگردی کو مزید تقویت ملی، میاں افتخار حسین
اسلام ٹائمز۔ سابق وزیر اطلاعات خیبر پختونخوا اور عوامی نیشنل پارٹی کے رہنماء میاں افتخار حسین نے کہا ہے کہ پشاور چرچ میں ہونے والے خودکش حملوں کے سوگ میں اے این پی ملک بھر میں 3 روزہ سوگ منائے گی۔ انہوں نے یہ اعلان حملے کے بعد جائے وقوع پر پہنچنے پر میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ میاں افتخار حسین کا اس موقع پر کہنا تھا کہ ہم حکومت میں ہوں یا نہ ہوں ساتھ جیئیں گے ساتھ مریں گے۔ عوام کا ساتھ نہیں چھوڑیں گے، حکومت دہشت گردوں کے خلاف کارروائی کرے۔ انہوں نے کہا کہ اگر عوام کو تکلیف ہے تو حکومت کو موجود ہونا چاہیے، میں یہاں ایک عام آدمی کی حیثیت سے آیا ہوں۔ ان کا کہنا ہے کہ اے پی سی کے بعد دہشت گردی کو مزید تقویت ملی، اقلیتوں کو سیکیورٹی کی ضرورت ہوتی ہے۔ قیام امن کے لئے حکومت کا ساتھ دیں گے۔ انہوں نے ڈاکٹروں سے بھی اپیل کی وہ فوری طور پر ڈیوٹیوں پر حاضر ہو جائیں، یہاں اس وقت شدید ضرورت ہے۔ میاں افتخار نے خدشہ طاہر کرتے ہو ئے کہا کہ لگتا ہے کہ 100 سے زائد افراد جاں بحق ہوئے ہیں۔
خبر کا کوڈ : 304247
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے