0
Wednesday 30 Nov 2011 14:20

پشاور، آئی ایس او اور عالمی متحدہ علماء مشائخ کونسل کی جانب سے امن کانفرنس کا انعقاد

پشاور، آئی ایس او اور عالمی متحدہ علماء مشائخ کونسل کی جانب سے امن کانفرنس کا انعقاد
اسلام ٹائمز۔ مختلف مکاتب فکر کے علماء اور اکابرین نے فرقہ واریت کو عالمی سازش کا حصہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ واقعہ کربلا اور حسینیت دنیا بھر کے مظلوم اقوام کو غلامی کی زنجیریں توڑنے اور ظلم و بربریت کیخلاف ڈٹ جانے کا عظیم درس دیتا ہے اس پیغام کی حقیقی روح کو مسخ کرنے کیلئے دنیا کی ظالم، جابر اور باطل قوتیں متحد ہو چکی ہیں اور فرقہ واریت کا زہر گھول کر مسلمانوں کی طاقت کو تقسیم در تقسیم کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے، مگر اب عالم اسلام کی بیداری کا وقت آ چکا ہے، تمام مسلمانان عالم اپنے فروعی اختلافات کو بلائے طاق رکھ کر اس طرح متحد ہو جائیں جیسا کہ کربلا والوں نے عظیم قربانی دے کر ہمیں درس دیا ہے۔ ان خیالات کا اظہار مختلف مکاتب فکر کے علماء کرام نے پریس کلب پشاور میں امن کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔
 
امن کانفرنس کا اہتمام عالمی متحدہ علماء مشائخ کونسل اور امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن نے مشترکہ طور پر کیا تھا، تقریب کے مہمان خصوصی صوبائی وزیر مذہبی و اقلیتی امور نمروز خان تھے، جبکہ تقریب سے خطاب کرنے والوں میں وفاقی حکومت کے مشیر علامہ سید آیاز ظہیر ہاشمی، مجلس وحدت المسلمین کے ڈپٹی جنرل سیکرٹری علامہ امین شہیدی، بلبل مدینہ مولانا محمد یونس جمعیت اہلحدیث کے ڈاکٹر حبیب اللہ شیخ، جے یو آئی کے قاری رفیق شاہ، علامہ علی اظہر نقوی سابق سینیٹر علامہ سید محمد جواد ہادی، آئی ایس او کے صدر ثاقب بنگش اور دیگر شامل تھے۔
امن کانفرنس میں درج ذیل قرار دادیں پیش کی گئی۔ 
1۔ ہم کراچی میں عزاداری امام حسین ع کا تحفظ کرنے والے بے گناہ اسکاؤٹس پر دہشتگردوں کے حملے کی بھرپور مذمت کرتے ہیں اور حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ ان دہشتگردوں کے خلاف فی الفور کارروائی کر کے مجرموں کو گرفتار کیا جائے۔
2۔ پاکستان آرمی کی چیک پوسٹ پر امریکی حملے کی بھرپور مذمت کرتے ہیں اور مطالبہ کرتے ہیں کہ امریکہ کے ساتھ ہر قسم کے تعلقات ختم کئے جائیں۔
3۔ محرم الحرام کے دوران پشاور، ہنگو، کوھاٹ اور ڈیرہ اسماعیل خان، کراچی اور کوئٹہ میں بعض دہشتگرد ٹولے اتحاد بین المسلمین کو سبوتاژ کرنے کے درپے ہیں، ہم حکومت سے اپیل کرتے ہیں کہ ان کالعدم گروہوں کیخلاف کارروائی کی جائے۔
خبر کا کوڈ : 118550
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب