0
Thursday 25 Sep 2014 20:54

شام میں دولت اسلامیہ کے خلاف امریکہ کی تازہ کارروائی، 14 شدت پسند ہلاک

شام میں دولت اسلامیہ کے خلاف امریکہ کی تازہ کارروائی، 14 شدت پسند ہلاک
اسلام ٹائمز۔ امریکا کی زیر قیادت اتحادی افواج نے شام میں دولت اسلامیہ کے زیر قبضہ تیل کے کارخانوں کو فضائی کارروائی کے ذریعے نشانہ بنایا ہے، جس میں کم از کم 14 شدت پسندوں سمیت 20 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔ اس حملے پر کے بعد شدت پسندوں نے مزید حملوں کے خدشے کے پیش نظر درجنوں قیدیوں کو رہا کر دیا ہے۔ واضح رہے کہ یہ امریکا کی زیر قیادت اتحادی افواج کی کارروائی کا تیسرا دن ہے جن کا مقصد شام کے شدت پسند گروپ کے آمدنی کے ذرائع محدود کرتے ہوئے ان کی پیش قدمی کو روکنا ہے۔ یاد رہے کہ پڑوسی ملک عراق میں امریکا ایک مہینے سے زائد مدت سے فضائی کارروائیاں کر رہا ہے۔ رواں سال کے آغاز میں شدت پسند گروپ نے ملک کی سب بڑی آئل ریفائنری سمیت بہت سے علاقوں پر قبضہ کرلیا تھا، جہاں ماہرین کا کہنا تھا کہ وہ آئل کی اسمگلنگ اور اسے بلیک مارکیٹ میں فروخت کر کے آمدنی کے وسائل پیدا کر رہے ہیں۔

شام کے لیے برطانوی انسانی حقوق کی تنظیم اور دو سماجی گروپوں کے مطابق مشرقی صوبے دیر ال زور کے علاقے میادین تیل کی چار تنصیبات اور تین ذخائر کو نشانہ بنایا۔ فضائی کارروائیوں میں کم ازکم 14 شدت سپند ہلاک ہوئے جبکہ شمال مشرقی صبے حساکے میں آئل ریفائنری کے قریب رہنے والے پانچ افراد بھی مارے گئے، جن کے بارے میں کہا جا رہا ہے کہ وہ شدت پسندوں کی خواتین اور بچے ہو سکتے ہیں۔ دوسری جانب فضائی کارروائیوں کے بعد شدت پسندوں نے شام کے شمال مشرقی علاقے رقا سے 150 سے زائد افراد کو رہا کر دیا ہے۔ اس کے علاوہ دریائے فرات کے کنارے ترک اور عراقی سرحد سے متصل علاقوں میں شدت پسندوں کی چوکیوں، کمپاؤنڈ، ٹریننگ گراؤنڈ اور گاڑیوں کو نشانہ بنایا گیا۔ اس کے علاعہ شدت پسندوں کے مختلف اڈوں، اسلامی عدالت کے لیے استعمال کی جانے والی عمارت اور ثقافتی مراکز کو بھی نشانہ بنایا گیا۔
خبر کا کوڈ : 411649
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب